ابھی تو عشق میں ایسا بھی حال ہونا ہے

وصی شاہ

ابھی تو عشق میں ایسا بھی حال ہونا ہے

وصی شاہ

MORE BYوصی شاہ

    ابھی تو عشق میں ایسا بھی حال ہونا ہے

    کہ اشک روکنا تم سے محال ہونا ہے

    ہر ایک لب پہ ہے میری وفا کے افسانے

    ترے ستم کو ابھی لا زوال ہونا ہے

    بجا کہ خواب ہیں لیکن بہار کی رت میں

    یہ طے ہے کہ اب کے ہمیں بھی نہال ہونا ہے

    تمہیں خبر ہی نہیں تم تو لوٹ جاؤ گے

    تمہارے ہجر میں لمحہ بھی سال ہونا ہے

    ہماری روح پہ جب بھی عذاب اتریں گے

    تمہاری یاد کو اس دل کو ڈھال ہونا ہے

    کبھی تو روئے گا وہ بھی کسی کی بانہوں میں

    کبھی تو اس کی ہنسی کو زوال ہونا ہے

    ملیں گی ہم کو بھی اپنے نصیب کی خوشیاں

    بس انتظار ہے کب یہ کمال ہونا ہے

    ہر ایک شخص چلے گا ہماری راہوں پر

    محبتوں میں ہمیں وہ مثال ہونا ہے

    زمانہ جس کے خم و پیچ میں الجھ جائے

    ہماری ذات کو ایسا سوال ہونا ہے

    وصیؔ یقین ہے مجھ کو وہ لوٹ آئے گا

    اسے بھی اپنے کئے کا ملال ہونا ہے

    RECITATIONS

    وصی شاہ

    وصی شاہ,

    وصی شاہ

    Abhi to ishq mein aisa bhi haal hona hai وصی شاہ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے