اگر یقیں نہیں آتا تو آزمائے مجھے

بشیر بدر

اگر یقیں نہیں آتا تو آزمائے مجھے

بشیر بدر

MORE BY بشیر بدر

    اگر یقیں نہیں آتا تو آزمائے مجھے

    وہ آئنہ ہے تو پھر آئنہ دکھائے مجھے

    عجب چراغ ہوں دن رات جلتا رہتا ہوں

    میں تھک گیا ہوں ہوا سے کہو بجھائے مجھے

    میں جس کی آنکھ کا آنسو تھا اس نے قدر نہ کی

    بکھر گیا ہوں تو اب ریت سے اٹھائے مجھے

    بہت دنوں سے میں ان پتھروں میں پتھر ہوں

    کوئی تو آئے ذرا دیر کو رلائے مجھے

    میں چاہتا ہوں کہ تم ہی مجھے اجازت دو

    تمہاری طرح سے کوئی گلے لگائے مجھے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    فہد

    فہد

    ہری ہرن

    ہری ہرن

    ہری ہرن

    ہری ہرن

    RECITATIONS

    فہد حسین

    فہد حسین

    فہد حسین

    اگر یقیں نہیں آتا تو آزمائے مجھے فہد حسین

    مآخذ:

    • کتاب : Aasman (Pg. 14)
    • Author : Bashir Badar
    • مطبع : M.R. Publications (2011)
    • اشاعت : 2011

    Tagged Under

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY