اے دیدہ خانماں تو ہمارا ڈبو سکا

محمد رفیع سودا

اے دیدہ خانماں تو ہمارا ڈبو سکا

محمد رفیع سودا

MORE BYمحمد رفیع سودا

    اے دیدہ خانماں تو ہمارا ڈبو سکا

    لیکن غبار یار کے دل سے نہ دھو سکا

    تجھ حسن نے دیا نہ کبھو مفسدی کو چین

    فتنہ نہ تیرے دور میں پھر نیند سو سکا

    جو شمع تن ہوا شب ہجراں میں صرف اشک

    پر جس قدر میں چاہے تھا اتنا نہ رو سکا

    سوداؔ قمار عشق میں شیریں سے کوہ کن

    بازی اگرچہ پا نہ سکا سر تو کھو سکا

    کس منہ سے پھر تو آپ کو کہتا ہے عشق باز

    اے رو سیاہ تجھ سے تو یہ بھی نہ ہو سکا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY