اے ستم گر نہیں دیکھا جاتا

مرزا مائل دہلوی

اے ستم گر نہیں دیکھا جاتا

مرزا مائل دہلوی

MORE BYمرزا مائل دہلوی

    اے ستم گر نہیں دیکھا جاتا

    زخم دل پر نہیں دیکھا جاتا

    ہم سے زاہد کو برابر اپنے

    لب کوثر نہیں دیکھا جاتا

    دشت کی جس میں کوئی بات نہ ہو

    ہم سے وہ گھر نہیں دیکھا جاتا

    ہم نے دیکھا ہی نہیں جلوۂ یار

    کہیں کیوں کر نہیں دیکھا جاتا

    دیکھنا شوق شہادت میرا

    مجھ سے خنجر نہیں دیکھا جاتا

    طور پر دیکھنے جاتے ہیں کلیمؔ

    دل کے اندر نہیں دیکھا جاتا

    مأخذ :
    • کتاب : Intekhab-e-Sukhan(Jild-2) (Pg. 230)
    • Author : Hasrat Mohani
    • مطبع : uttar pradesh urdu academy (1983)
    • اشاعت : 1983

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY