عجب جنون مسافت میں گھر سے نکلا تھا

احمد فراز

عجب جنون مسافت میں گھر سے نکلا تھا

احمد فراز

MORE BYاحمد فراز

    عجب جنون مسافت میں گھر سے نکلا تھا

    خبر نہیں ہے کہ سورج کدھر سے نکلا تھا

    یہ کون پھر سے انہیں راستوں میں چھوڑ گیا

    ابھی ابھی تو عذاب سفر سے نکلا تھا

    یہ تیر دل میں مگر بے سبب نہیں اترا

    کوئی تو حرف لب چارہ گر سے نکلا تھا

    یہ اب جو آگ بنا شہر شہر پھیلا ہے

    یہی دھواں مرے دیوار و در سے نکلا تھا

    میں رات ٹوٹ کے رویا تو چین سے سویا

    کہ دل کا زہر مری چشم تر سے نکلا تھا

    یہ اب جو سر ہیں خمیدہ کلاہ کی خاطر

    یہ عیب بھی تو ہم اہل ہنر سے نکلا تھا

    وہ قیس اب جسے مجنوں پکارتے ہیں فرازؔ

    تری طرح کوئی دیوانہ گھر سے نکلا تھا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    مہدی حسن

    مہدی حسن

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق,

    نعمان شوق

    عجب جنون مسافت میں گھر سے نکلا تھا نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے