عجب طرح سے میں صرف ملال ہونے لگا

سحر انصاری

عجب طرح سے میں صرف ملال ہونے لگا

سحر انصاری

MORE BYسحر انصاری

    عجب طرح سے میں صرف ملال ہونے لگا

    جو شہر کا ہے وہی دل کا حال ہونے لگا

    سب اس کی بزم میں تھے مجرموں کی طرح خموش

    ہم آ گئے تو ہمیں سے سوال ہونے لگا

    اب آسماں سے مجھے شکوۂ جفا بھی نہیں

    ہر انقلاب مرے حسب حال ہونے لگا

    ہمارے کیف و مسرت میں اہتمام کہاں

    ہوائے تازہ چلی جی بحال ہونے لگا

    جو خوش نہیں ہے سحرؔ بن کے میرا ہمسایہ

    وہ کس گماں پہ مرا ہم خیال ہونے لگا

    مآخذ :
    • کتاب : Pakistani Adab (Pg. 509)
    • Author : Dr. Rashid Amjad
    • مطبع : Pakistan Academy of Letters, Islambad, Pakistan (2009)
    • اشاعت : 2009

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY