عکس کس چیز کا آئینۂ حیرت میں نہیں

اصغر گونڈوی

عکس کس چیز کا آئینۂ حیرت میں نہیں

اصغر گونڈوی

MORE BYاصغر گونڈوی

    عکس کس چیز کا آئینۂ حیرت میں نہیں

    تیری صورت میں ہے کیا جو میری صورت میں نہیں

    دونوں عالم تری نیرنگ ادائی کے نثار

    اب کوئی چیز یہاں جیب محبت میں نہیں

    دولت قرب کو خاصان محبت جانیں

    چند اشکوں کے سوا کچھ میری قسمت میں نہیں

    لوگ مرتے بھی ہیں، جیتے بھی ہیں، بیتاب بھی ہیں

    کون سا سحر تری چشم عنایت میں نہیں

    سب سے اک طرز جدا، سب سے اک آہنگ جدا

    رنگ محفل میں ترا جو ہے وہ خلوت میں نہیں

    نشۂ عشق میں ہر چیز اڑی جاتی ہے

    کون ذرہ ہے کہ سرشار محبت میں نہیں

    دعوئ دید غلط دعوئ عرفاں بھی غلط

    کچھ تجلی کے سوا چشم بصیرت میں نہیں

    ہو گئی جمع متاع غم حرماں کیوں کر

    میں سمجھتا تھا کوئی پردۂ غفلت میں نہیں

    ذرے ذرے میں کیا جوش ترنم پیدا

    خود مگر کوئی نوا ساز محبت میں نہیں

    نجد کی سمت سے یہ شور انا لیلیٰ کیوں

    شوخیٔ حسن اگر پردۂ وحشت میں نہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY