عکس کچھ نہ بدلے گا آئنوں کو دھونے سے

فرحان سالم

عکس کچھ نہ بدلے گا آئنوں کو دھونے سے

فرحان سالم

MORE BY فرحان سالم

    عکس کچھ نہ بدلے گا آئنوں کو دھونے سے

    آذری نہیں آتی پتھروں پہ رونے سے

    مسئلہ نہ سلجھے گا پیاس بجھ نہ پائے گی

    بے حسی کے ساغر میں آپ کو ڈبونے سے

    توڑ دو حدیں ساری یہ بھی تجربہ کر لو

    ذات اور سمٹے گی بے حجاب ہونے سے

    لب پہ زعم مے خواری اور قدم بہکتے ہیں

    صرف کاسۂ مے میں انگلیاں ڈبونے سے

    ہر صدف کے سینے میں گر رہا ہے اک موتی

    درد و غم کے ماروں کی کشتیاں ڈبونے سے

    زخم روز اک تازہ دے دیا کرو ورنہ

    بے دلی سی رہتی ہے درد کے نہ ہونے سے

    ہر لہو فغاں دے گا ہر دیا دھواں دے گا

    داغ مٹ نہیں سکتے دامنوں کو دھونے سے

    کون سی وہ آتش تھی میرے خون میں سالمؔ

    ہاتھ جل گئے اس کے انگلیاں ڈبونے سے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY