aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

اپنے در سے جو اٹھاتے ہیں ہمیں

امداد امام اثر

اپنے در سے جو اٹھاتے ہیں ہمیں

امداد امام اثر

MORE BYامداد امام اثر

    اپنے در سے جو اٹھاتے ہیں ہمیں

    خاک میں آپ ملاتے ہیں ہمیں

    ہے جو منظور جفا در پردہ

    منہ وہ غیروں میں دکھاتے ہیں ہمیں

    غیر کو پاس بٹھا رکھتے ہیں

    جب کبھی آپ بلاتے ہیں ہمیں

    گرمیاں غیر کو دکھلا دکھلا

    بزم میں آپ جلاتے ہیں ہمیں

    شب فرقت میں فلک کے تارے

    داغ دل یاد دلاتے ہیں ہمیں

    ان کے انداز سخن ہیں معلوم

    غیر کو کہہ کے سناتے ہیں ہمیں

    پھر کسی گل پہ ہوا دل مائل

    داغ تازہ نظر آتے ہیں ہمیں

    چھوڑ دیں آپ کی ہم راہی ہم

    واہ کیا راہ بتاتے ہیں ہمیں

    تو ہمیں راہ بتائے جس سے

    غیر وہ راہ بتاتے ہیں ہمیں

    عطر گل سے نہیں جب دل بھرتا

    اپنا رومال سونگھاتے ہیں ہمیں

    شب کو افسانۂ دل کہہ کے اثرؔ

    آپ روتے ہیں رلاتے ہیں ہمیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے