اپنی ہستی خود ہم آغوش فنا ہو جائے گی

یگانہ چنگیزی

اپنی ہستی خود ہم آغوش فنا ہو جائے گی

یگانہ چنگیزی

MORE BYیگانہ چنگیزی

    دلچسپ معلومات

    (1917ء)

    اپنی ہستی خود ہم آغوش فنا ہو جائے گی

    موج دریا آب ساحل آشنا ہو جائے گی

    تہ کا اندیشہ رہے گا پھر نہ ساحل کی ہوس

    دل سے جب قطع امید بے وفا ہو جائے گی

    شب کی شب بزم طرب ہے پردہ دار انقلاب

    صبح تک آئینۂ عبرت نما ہو جائے گی

    جان ایماں ہے ابھی وہ آنکھ شرمائی ہوئی

    کیفیت میں ڈوب کر کیا جانے کیا ہو جائے گی

    مأخذ :
    • کتاب : Kulliyat-e-Yagana (Pg. 283)
    • Author : Meerza Yagana Changezi Lukhnawi
    • مطبع : Farib Book Depot (P) Ltd. (2005)
    • اشاعت : 2005

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے