اپنی کمی سے پوچھ نہ اس کی کمی سے پوچھ

عابد اختر

اپنی کمی سے پوچھ نہ اس کی کمی سے پوچھ

عابد اختر

MORE BY عابد اختر

    اپنی کمی سے پوچھ نہ اس کی کمی سے پوچھ

    عصمت کا بھاؤ جسم کی بے چارگی سے پوچھ

    غاروں میں رہنے والوں کی شائستگی کا قد

    سڑکوں پہ رقص کرتی ہوئی آگہی سے پوچھ

    مجھ میں یہ انتشار یہ نفرت ہے کس لیے

    گزرے ہوئے سماج کی دیوانگی سے پوچھ

    ڈالی سے چھوٹ جانے کا انجام کیا ہوا

    برگ خزاں رسیدہ کی آوارگی سے پوچھ

    اشکوں میں التجاؤں میں طاقت نہیں ہے کیوں

    ذہنوں پہ راج کرتی ہوئی بے حسی سے پوچھ

    کھلنے کے انتظار میں جو زرد ہو گئی

    رنگ سلوک باد صبا اس کلی سے پوچھ

    بندوں کے سلسلے میں بہت تو نے کہہ لیا

    اللہ اپنے بارے میں کچھ آدمی سے پوچھ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY