عقل سے کام کر

حفیظ کرناٹکی

عقل سے کام کر

حفیظ کرناٹکی

MORE BYحفیظ کرناٹکی

    عقل سے کام کر

    دہر میں نام کر

    میں نے دیکھا اسے

    اپنا دل تھام کر

    قوم کا ہو بھلا

    ایسا اقدام کر

    اپنا ہر رنج و غم

    تو مرے نام کر

    زندگی ہے یہی

    صبح سے شام کر

    مول اپنا بڑھا

    مجھ کو بے دام کر

    دیر حافظؔ نہ ہو

    جلد ہر کام کر

    مآخذ:

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY