اثر زلف کا برملا ہو گیا

مرزارضا برق ؔ

اثر زلف کا برملا ہو گیا

مرزارضا برق ؔ

MORE BYمرزارضا برق ؔ

    اثر زلف کا برملا ہو گیا

    بلاؤں سے مل کر بلا ہو گیا

    جنوں لے کے ہم راہ آئی بہار

    نئے سر سے پھر ولولا ہو گیا

    دیا غیر نے بھی دل آخر اسے

    مجھے دیکھ کر من چلا ہو گیا

    سمائی دل تنگ کی دیکھیے

    کہ عالم میں ثابت خلا ہو گیا

    تعلی زمیں سے جو نالوں نے کی

    فلک پر عیاں زلزلہ ہو گیا

    ہوا قتل بے جرم میں جا کے برقؔ

    وہ کوچہ مجھے کربلا ہو گیا

    RECITATIONS

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    اثر زلف کا برملا ہو گیا فصیح اکمل

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY