اور کیا آخر تجھے اے زندگانی چاہیئے

مدن موہن دانش

اور کیا آخر تجھے اے زندگانی چاہیئے

مدن موہن دانش

MORE BYمدن موہن دانش

    اور کیا آخر تجھے اے زندگانی چاہیئے

    آرزو کل آگ کی تھی آج پانی چاہیئے

    یہ کہاں کی ریت ہے جاگے کوئی سوئے کوئی

    رات سب کی ہے تو سب کو نیند آنی چاہیئے

    اس کو ہنسنے کے لئے تو اس کو رونے کے لئے

    وقت کی جھولی سے سب کو اک کہانی چاہیئے

    کیوں ضروری ہے کسی کے پیچھے پیچھے ہم چلیں

    جب سفر اپنا ہے تو اپنی روانی چاہیئے

    کون پہچانے گا دانشؔ اب تجھے کردار سے

    بے مروت وقت کو تازہ نشانی چاہیئے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    مدن موہن دانش

    مدن موہن دانش

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY