اول اول کی دوستی ہے ابھی

احمد فراز

اول اول کی دوستی ہے ابھی

احمد فراز

MORE BY احمد فراز

    اول اول کی دوستی ہے ابھی

    اک غزل ہے کہ ہو رہی ہے ابھی

    میں بھی شہر وفا میں نو وارد

    وہ بھی رک رک کے چل رہی ہے ابھی

    میں بھی ایسا کہاں کا زود شناس

    وہ بھی لگتا ہے سوچتی ہے ابھی

    دل کی وارفتگی ہے اپنی جگہ

    پھر بھی کچھ احتیاط سی ہے ابھی

    گرچہ پہلا سا اجتناب نہیں

    پھر بھی کم کم سپردگی ہے ابھی

    کیسا موسم ہے کچھ نہیں کھلتا

    بوندا باندی بھی دھوپ بھی ہے ابھی

    خود کلامی میں کب یہ نشہ تھا

    جس طرح روبرو کوئی ہے ابھی

    قربتیں لاکھ خوبصورت ہوں

    دوریوں میں بھی دل کشی ہے ابھی

    فصل گل میں بہار پہلا گلاب

    کس کی زلفوں میں ٹانکتی ہے ابھی

    مدتیں ہو گئیں فرازؔ مگر

    وہ جو دیوانگی کہ تھی ہے ابھی

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    متفرق

    متفرق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY