اول تو ترے کوچے میں آنا نہیں ملتا

مصحفی غلام ہمدانی

اول تو ترے کوچے میں آنا نہیں ملتا

مصحفی غلام ہمدانی

MORE BYمصحفی غلام ہمدانی

    اول تو ترے کوچے میں آنا نہیں ملتا

    آؤں تو کہیں تیرا ٹھکانا نہیں ملتا

    ملنا جو مرا چھوڑ دیا تو نے تو مجھ سے

    خاطر سے تری سارا زمانا نہیں ملتا

    آوے تو بہانے سے چلا شب مرے گھر کو

    ایسا کوئی کیا تجھ کو بہانا نہیں ملتا

    کیا فائدہ گر حرص کرے زر کی تو ناداں

    کچھ حرص سے قاروں کا خزانا نہیں ملتا

    بھولے سے بھی اس نے نہ کہا یوں مرے حق میں

    کیا ہو گیا جو اب وہ دوانا نہیں ملتا

    پھر بیٹھنے کا مجھ کو مزہ ہی نہیں اٹھتا

    جب تک کہ ترے شانے سے شانا نہیں ملتا

    اے مصحفیؔ استاد فن ریختہ گوئی

    تجھ سا کوئی عالم کو میں چھانا نہیں ملتا

    RECITATIONS

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    اول تو ترے کوچے میں آنا نہیں ملتا فصیح اکمل

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY