باد نسیاں ہے مرا نام بتا دو کوئی

ساقی فاروقی

باد نسیاں ہے مرا نام بتا دو کوئی

ساقی فاروقی

MORE BY ساقی فاروقی

    باد نسیاں ہے مرا نام بتا دو کوئی

    ڈھونڈ کر لاؤ مجھے میرا پتا دو کوئی

    حادثہ ہے کہ ستاروں سے مجھے وحشت ہے

    مجھ کو اس دشت کے آداب سکھا دو کوئی

    وہ اندھیرا ہے کہ تنہائی سے ہول آتا ہے

    سارے بچھڑے ہوئے لوگوں کو صدا دو کوئی

    ایک مدت سے چراغوں کی طرح جلتی ہیں

    ان ترستی ہوئی آنکھوں کو بجھا دو کوئی

    موج در موج مری زندگی گرداب میں ہے

    اس سفینے کو کنارے سے لگا دو کوئی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites