بدن کی اوٹ سے تکنے لگا ہے

پریم کمار نظر

بدن کی اوٹ سے تکنے لگا ہے

پریم کمار نظر

MORE BYپریم کمار نظر

    بدن کی اوٹ سے تکنے لگا ہے

    وہ اپنا ذائقہ چکھنے لگا ہے

    منڈیروں پر پرندے چہچہائے

    پس دیوار پھل پکنے لگا ہے

    بہت لمبی مسافت ہے بدن کی

    مسافر مبتدی تھکنے لگا ہے

    اسے اندھا سفر کیا راس آیا

    قدم بے ساختہ رکھنے لگا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY