بڑی مشکل سے چھپایا ہے کوئی دیکھ نہ لے

جاوید صبا

بڑی مشکل سے چھپایا ہے کوئی دیکھ نہ لے

جاوید صبا

MORE BYجاوید صبا

    بڑی مشکل سے چھپایا ہے کوئی دیکھ نہ لے

    آنکھ میں اشک جو آیا ہے کوئی دیکھ نہ لے

    یہ جو محفل میں مرے نام سے موجود ہوں میں

    میں نہیں ہوں مرا دھوکا ہے کوئی دیکھ نہ لے

    سات پردوں میں چھپا کر اسے رکھا ہے مگر

    دل کو اب بھی یہی دھڑکا ہے کوئی دیکھ نہ لے

    ڈر رہا ہوں کہ سر شام تری آنکھوں میں

    میں نے جو وقت گزارا ہے کوئی دیکھ نہ لے

    ہاتھ نرمی سے چھڑاتی ہوئی خلوت نے کہا

    یہ جو خلوت ہے تماشا ہے کوئی دیکھ نہ لے

    تیرا میرا کوئی رشتہ تو نہیں ہے لیکن

    میں نے جو خواب میں دیکھا ہے کوئی دیکھ نہ لے

    ساتھ چلنا ہے تو غیروں کی طرح ساتھ نہ چل

    شہر کا شہر شناسا ہے کوئی دیکھ نہ لے

    RECITATIONS

    جاوید صبا

    جاوید صبا,

    جاوید صبا

    بڑی مشکل سے چھپایا ہے کوئی دیکھ نہ لے جاوید صبا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے