بہت دل کر کے ہونٹوں کی شگفتہ تازگی دی ہے

جاں نثاراختر

بہت دل کر کے ہونٹوں کی شگفتہ تازگی دی ہے

جاں نثاراختر

MORE BY جاں نثاراختر

    بہت دل کر کے ہونٹوں کی شگفتہ تازگی دی ہے

    چمن مانگا تھا پر اس نے بمشکل اک کلی دی ہے

    مرے خلوت کدے کے رات دن یوں ہی نہیں سنورے

    کسی نے دھوپ بخشی ہے کسی نے چاندنی دی ہے

    نظر کو سبز میدانوں نے کیا کیا وسعتیں بخشیں

    پگھلتے آبشاروں نے ہمیں دریا دلی دی ہے

    محبت ناروا تقسیم کی قائل نہیں پھر بھی

    مری آنکھوں کو آنسو تیرے ہونٹوں کو ہنسی دی ہے

    مری آوارگی بھی اک کرشمہ ہے زمانے میں

    ہر اک درویش نے مجھ کو دعائے خیر ہی دی ہے

    کہاں ممکن تھا کوئی کام ہم جیسے دوانوں سے

    تمہیں نے گیت لکھوائے تمہیں نے شاعری دی ہے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    بہت دل کر کے ہونٹوں کی شگفتہ تازگی دی ہے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites