بہت اداس ہے دل جانے ماجرا کیا ہے

سراجؔ عالم زخمی

بہت اداس ہے دل جانے ماجرا کیا ہے

سراجؔ عالم زخمی

MORE BYسراجؔ عالم زخمی

    بہت اداس ہے دل جانے ماجرا کیا ہے

    مرے نصیب میں غم کے سوا دھرا کیا ہے

    میں جن کے واسطے دنیا ہی چھوڑ آیا تھا

    وہ پوچھتے ہیں کہ آخر تجھے ہوا کیا ہے

    نبھا رہا ہوں میں دنیا کے راہ و رسم یہاں

    وگرنہ جسم کے صحرا میں اب بچا کیا ہے

    یہاں تو عید کا موسم بھی اب نہیں آتا

    نہ جانے گردش دوراں کو ہو گیا کیا ہے

    ہر ایک رات مری زندگی کا ماتم ہے

    ہر ایک شام یہاں موت کے سوا کیا ہے

    ہمارا فرض تو جلنا ہے صرف محفل میں

    بھلا چراغ کا خوشیوں سے واسطہ کیا ہے

    مأخذ :
    • کتاب : Lahja bolta hai (Pg. 70)
    • Author : Siraj Alam Zakhmi
    • مطبع : Gulistan-e-adab (2015)
    • اشاعت : 2015

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے