برون در نکلتے ہی بہت گھبرا گیا ہوں

محمد اظہار الحق

برون در نکلتے ہی بہت گھبرا گیا ہوں

محمد اظہار الحق

MORE BY محمد اظہار الحق

    برون در نکلتے ہی بہت گھبرا گیا ہوں

    میں جس دنیا میں تھا کیوں اس سے واپس آ گیا ہوں

    کوئی سیارہ میرے اور اس کے درمیاں ہے

    میں کیا تھا اور دیکھو کس طرح گہنا گیا ہوں

    مجھے راس آ نہ پائیں گے یہ پانی اور مٹی

    کہ میں اک اور مٹی سے ہوں اور مرجھا گیا ہوں

    میں پتھر چوم کر تحلیل ہو جاتا ہوا میں

    مگر زندہ ہوں اور ہیہات واپس آ گیا ہوں

    کہاں میں اور کہاں دربار کا جہل و تکبر

    مگر اک اسم کی تسبیح جس سے چھا گیا ہوں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites