بس اک نظر میں دل و جاں فگار کرتا ہے

معین شاداب

بس اک نظر میں دل و جاں فگار کرتا ہے

معین شاداب

MORE BYمعین شاداب

    بس اک نظر میں دل و جاں فگار کرتا ہے

    وہ شخص کتنے سلیقے سے وار کرتا ہے

    تمہاری چال سے تو مات کھا گیا وہ بھی

    وہی جو اڑتے پرندے شکار کرتا ہے

    یہ مرحلہ بھی کسی امتحاں سے کم تو نہیں

    وہ شخص مجھ پہ بہت اعتبار کرتا ہے

    یہ کس کا حسن مہکتا ہے میرے شعروں میں

    یہ کون ہے جو انہیں خوش گوار کرتا ہے

    تمہارے غم کو میں دل سے لگا کے رکھتا ہوں

    یہی تو ہے جو مجھے با وقار کرتا ہے

    مأخذ :
    • کتاب : Karwaan-e-Ghazal (Pg. 457)
    • Author : Farooq Argali
    • مطبع : Farid Book Depot (Pvt.) Ltd (2004)
    • اشاعت : 2004

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY