بہر چراغ خود کو جلانے والی میں

عذرا پروین

بہر چراغ خود کو جلانے والی میں

عذرا پروین

MORE BYعذرا پروین

    بہر چراغ خود کو جلانے والی میں

    دھوئیں میں اپنے کرب چھپانے والی میں

    ہریالی درکار اڑانیں بھی پیاری

    کدھر چلی میں کدھر تھی جانے والی میں

    دھنک رتوں کے جال بچھانے والا تو

    الجھ کے اپنا آپ گنوانے والی میں

    میری چپ کا جشن منانے والا تو

    تلواروں سے کاٹ چرانے والی میں

    پونجی سن کر سمٹ نہ پانے والا تو

    سکہ سکہ تجھے چرانے والی میں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے