بولئے کرتا ہوں منت آپ کی

امداد علی بحر

بولئے کرتا ہوں منت آپ کی

امداد علی بحر

MORE BYامداد علی بحر

    بولئے کرتا ہوں منت آپ کی

    کیوں مکدر ہے طبیعت آپ کی

    پھونکے دیتی ہے کلیجا سینے میں

    شعلہ بن بن کر محبت آپ کی

    اتنی بے پروائیاں اچھی نہیں

    لوگ کرتے ہیں شکایت آپ کی

    چاندنی منہ پر نہ پڑنے دیجیے

    میلی ہو جائے گی رنگت آپ کی

    ایک دل رکھتے تھے وہ بھی کھو چکے

    ہو گئے مفلس بدولت آپ کی

    داغ ہم کو خال صاحب کو ملا

    یہ نصیب اپنا وہ قسمت آپ کی

    مر کے پھر زندہ ہوئے سمجھیں گے ہم

    جھیل جائیں گے جو فرقت آپ کی

    منہ لگا کر پھر نہ ہرگز پوچھنا

    واہ کیا اچھی ہے عادت آپ کی

    حوریں جنت سے تو پریاں قاف سے

    دیکھنے آتی ہیں صورت آپ کی

    میری صورت سے اگر نفرت نہیں

    کیوں بدل جاتی ہے رنگت آپ کی

    ایک بوسے پر ہزاروں حجتیں

    مانیے کیوں کر سخاوت آپ کی

    سن کے مطلب صاف آنکھیں پھیر لیں

    دیکھ لی ہم نے مروت آپ کی

    پھول کی جا پنکھڑی اے باغ حسن

    داغ دل پر ہے عنایت آپ کی

    ہر کسی کے سامنے روتے ہو بحرؔ

    بہہ گئی آنکھوں سے غیرت آپ کی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY