بلبل بجائے اپنے تجھے ہم نوا سے بحث

ولی اللہ محب

بلبل بجائے اپنے تجھے ہم نوا سے بحث

ولی اللہ محب

MORE BYولی اللہ محب

    بلبل بجائے اپنے تجھے ہم نوا سے بحث

    واشد میں گل کی محض غلط ہے صبا سے بحث

    آئینے کو نہ چاہئے عاشق کے دل کے ساتھ

    برعکس اپنی شکل کے روئے صفا سے بحث

    اب تو غرور حسن ہے ایسا بتاں تمہیں

    مطلق محل خوف نہیں ہے خدا سے بحث

    مبحث سے اس مقام کے خارج ہے دخل غیر

    جب آشنا کو آن پڑے آشنا سے بحث

    بلبل ہزار نغمہ سرا ہوئے باغ میں

    کب کر سکے ہے نالۂ دل کی صدا سے بحث

    دانا نہ اس کو سمجھئے جو غیر خامشی

    دل خستہ ہو فلک کے کرے آسیا سے بحث

    کب شمع تیرے حسن کے شعلے کے روبرو

    محفل میں کر سکے کم و بیش ضیا سے بحث

    توسن نے تیری نازکی گلشن میں ختم کی

    آج آب و رنگ گل کی ہوس پر ہوا سے بحث

    گلشن میں چاک پیرہن گل کیا محبؔ

    بلبل نے کر کے اس بت‌ گلگوں قبا سے بحث

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے