چاہیئے دنیا نہ عقبیٰ چاہیئے

جلیل مانک پوری

چاہیئے دنیا نہ عقبیٰ چاہیئے

جلیل مانک پوری

MORE BYجلیل مانک پوری

    چاہیئے دنیا نہ عقبیٰ چاہیئے

    جو تجھے چاہے اسے کیا چاہیئے

    زندگی کیا جو بسر ہو چین سے

    دل میں تھوڑی سی تمنا چاہیئے

    تاب نظارہ ان آنکھوں کو کہاں

    دیکھنے والوں سے پردا چاہیئے

    مجھ کو دیکھو اور میری آرزو

    اک حسیں اچھے سے اچھا چاہیئے

    وہ بہت دیر آشنا ہے اے جلیلؔ

    آشنائی کو زمانا چاہیئے

    مآخذ:

    • کتاب : Kainat-e-Jalil Manakpuri (Pg. 129)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY