چاند تو کھل اٹھا ستاروں میں

سوہن راہی

چاند تو کھل اٹھا ستاروں میں

سوہن راہی

MORE BY سوہن راہی

    چاند تو کھل اٹھا ستاروں میں

    ہم سلگتے رہے شراروں میں

    دل وحشت زدہ کا حال نہ پوچھ

    پھول مرجھا گئے بہاروں میں

    آنسوؤں کے چراغ روشن ہیں

    دیکھ پھر تیری رہ گزاروں میں

    کائنات اور بھی نکھر جائے

    رنگ بھر دو اگر نظاروں میں

    پھول کھلتے ہیں ہر برس ان پر

    دفن ہے کون ان مزاروں میں

    میرے سارے خلوص کی دولت

    بانٹ دو جا کے غم کے ماروں میں

    میں تو راہی ہوں تیری منزل کا

    اور تو گم ہے چاند تاروں میں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY