چونک چونک اٹھتی ہے محلوں کی فضا رات گئے

جاں نثاراختر

چونک چونک اٹھتی ہے محلوں کی فضا رات گئے

جاں نثاراختر

MORE BYجاں نثاراختر

    چونک چونک اٹھتی ہے محلوں کی فضا رات گئے

    کون دیتا ہے یہ گلیوں میں صدا رات گئے

    یہ حقائق کی چٹانوں سے تراشی دنیا

    اوڑھ لیتی ہے طلسموں کی ردا رات گئے

    چبھ کے رہ جاتی ہے سینے میں بدن کی خوشبو

    کھول دیتا ہے کوئی بند قبا رات گئے

    آؤ ہم جسم کی شمعوں سے اجالا کر لیں

    چاند نکلا بھی تو نکلے گا ذرا رات گئے

    تو نہ اب آئے تو کیا آج تلک آتی ہے

    سیڑھیوں سے ترے قدموں کی صدا رات گئے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے