چپکے سے مجھ کو آج کوئی یہ بتا گیا

رضی رضی الدین

چپکے سے مجھ کو آج کوئی یہ بتا گیا

رضی رضی الدین

MORE BYرضی رضی الدین

    چپکے سے مجھ کو آج کوئی یہ بتا گیا

    کل رات میں بھی اس کی خیالوں میں آ گیا

    جیسے کہ کھل اٹھے کوئی جاتی بہار میں

    مردہ پڑا تھا میں مجھے چھو کر جلا دیا

    اک روشنی میں ڈوبے ہوئے تھے مرے چراغ

    وہ وصل کے لئے مرے پہلو میں آ گیا

    مدت کے بعد نیند کی لذت نہ پوچھئے

    نشہ چڑھا ہوا تھا سو چڑھتا چلا گیا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے