دامن دل ہے تار تار اپنا

اقبال صفی پوری

دامن دل ہے تار تار اپنا

اقبال صفی پوری

MORE BYاقبال صفی پوری

    دامن دل ہے تار تار اپنا

    کام کر ہی گئی بہار اپنا

    جب سے تسکین دے گیا ہے کوئی

    اور بھی دل ہے بے قرار اپنا

    دیکھ کر بھی انہیں نہ دیکھ سکے

    رہ گیا شوق انتظار اپنا

    جستجو آ گئی سر منزل

    رہ گیا راہ میں غبار اپنا

    وہ نظر پھر گئی تو کیا ہوگا

    اس نظر تک ہے اعتبار اپنا

    اس کی ہر جنبش نظر کے ساتھ

    رخ بدلتی گئی بہار اپنا

    ہر نفس ہے انہیں کی یاد اقبالؔ

    غم ہے کیسا سدا بہار اپنا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY