دامن دل پہ نہیں بارش الہام ابھی

اسرار الحق مجاز

دامن دل پہ نہیں بارش الہام ابھی

اسرار الحق مجاز

MORE BY اسرار الحق مجاز

    دامن دل پہ نہیں بارش الہام ابھی

    عشق نا پختہ ابھی جذب دروں خام ابھی

    خود ہی جھکتا ہوں کہ دعوائے جنوں کیا کیجئے

    کچھ گوارا بھی ہے یہ قید در و بام ابھی

    یہ جوانی تو ابھی مائل پیکار نہیں

    یہ جوانی تو ہے رسوائے مے و جام ابھی

    واعظ و شیخ نے سر جوڑ کے بد نام کیا

    ورنہ بد نام نہ ہوتی مے گلفام ابھی

    میں بصد فخریہ زہاد سے کہتا ہوں مجازؔ

    مجھ کو حاصل، شرف بیعت خیام ابھی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY