ڈر تو مجھے کس کا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

مومن خاں مومن

ڈر تو مجھے کس کا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

مومن خاں مومن

MORE BYمومن خاں مومن

    ڈر تو مجھے کس کا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    پر حال یہ افشا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    tis not because of fear that from speaking I refrain

    but as my state is known to all, so quiet I remain

    ناصح یہ گلہ کیا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    تو کب مری سنتا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    O preacher you complain about my silent state today

    whenever do you listen to me whatever I say

    میں بولوں تو چپ ہوتے ہیں اب آپ جبھی تک

    یہ رنجش بے جا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    you stay silent only till I've started to express

    unfounded is your anger then at my speechlessness

    کچھ غیر سے ہونٹوں میں کہے ہے یہ جو پوچھو

    تو ووہیں مکرتا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    she whispers to my rival and when I ask replies

    "I did not talk to him at all" and blatantly denies

    کب پاس پھٹکنے دوں رقیبوں کو تمہارے

    پر پاس تمہارا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    would I ever let my foes get anywhere so near?

    But since I have regard for you, I do not interfere

    ناصح کو جو چاہوں تو ابھی ٹھیک بنا دوں

    پر خوف خدا کا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    if I so wish, can easily now set the preacher right

    it is the fear of God that keeps me in a silent plight

    کیا کیا نہ کہے غیر کی گر بات نہ پوچھو

    یہ حوصلہ میرا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    if I don’t ask about my foe, you rant and rave like how

    it is my courage even then, I do not speak somehow

    کیا کہئے نصیبوں کو کہ اغیار کا شکوہ

    سن سن کے وہ چپکا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    ........................................................................................

    ........................................................................................

    مت پوچھ کہ کس واسطے چپ لگ گئی ظالم

    بس کیا کہوں میں کیا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    O tyrant do not ask the reason for my quiesence

    what can I say what it is so I prefer silence

    چپکے سے ترے ملنے کا گھر والوں میں تیرے

    اس واسطے چرچا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    talk of our secret tryst is rife, when in your family

    tis for that reason reticent that I now choose to be

    ہاں تنگ دہانی کا نہ کرنے کے لیے بات

    ہے عذر پر ایسا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    ........................................................................................

    ........................................................................................

    اے چارہ گرو قابل درماں نہیں یہ درد

    ورنہ مجھے سودا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    incapable of remedy, O healer, is my pain

    or do you think me mad that I do not complain

    ہر وقت ہے دشنام ہر اک بات میں طعنہ

    پھر اس پہ بھی کہتا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    you abuse me all the time, with taunts and jibes or worse

    even then you do complain that I do not converse

    کچھ سن کے جو میں چپ ہوں تو تم کہتے ہو بولو

    سمجھو تو یہ تھوڑا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    when I'm silent at your words, you ask me to speak out

    my quiet's no small matter, you should not be in doubt

    سنتا نہیں وہ ورنہ یہ سرگوشی اغیار

    کیا مجھ کو گوارا ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    ........................................................................................

    ........................................................................................

    مومنؔ بخدا سحر بیانی کا جبھی تک

    ہر ایک کو دعویٰ ہے کہ میں کچھ نہیں کہتا

    it's true, Momin, that everyone claims magic in his speech

    but only till the moment that my silence I don't breach

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY