درد و غم رنج و الم آہ و فغاں

یوگیندر بہل تشنہ

درد و غم رنج و الم آہ و فغاں

یوگیندر بہل تشنہ

MORE BYیوگیندر بہل تشنہ

    درد و غم رنج و الم آہ و فغاں

    سرگزشت عشق کی ہیں سرخیاں

    دل ہے میرا مائل فریاد آج

    دیکھ کر ان کے تغافل کا سماں

    اک ذرا رک جائیے سن لیجئے

    اس دل رنجور کی بھی داستاں

    آپ نے تو اک نظر دیکھا فقط

    جل گیا تاب و تواں کا آشیاں

    اے دل غمگیں نہ رو اس دور میں

    کون سنتا ہے کسی کی داستاں

    آتش الفت تو کب کی جل بجھی

    رات دن سینے سے اٹھتا ہے دھواں

    نظم مے خانہ بدل کر رکھ دیں ہم

    آؤ اے زندہ دلاں تشنہؔ لباں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY