درد پرانا آنسو مانگے آنسو کہاں سے لاؤں

ساقی فاروقی

درد پرانا آنسو مانگے آنسو کہاں سے لاؤں

ساقی فاروقی

MORE BY ساقی فاروقی

    درد پرانا آنسو مانگے آنسو کہاں سے لاؤں

    روح میں ایسی کونپل پھوٹی میں کمہلاتا جاؤں

    میرے اندر بیٹھا کوئی میری ہنسی اڑائے

    ایک پلک کو اندر جاؤں باہر بھاگا آؤں

    سارے موتی جھوٹے نکلے سارے جادو ٹوٹے

    میری خالی آنکھو بولو اب کیا خواب دکھاؤں

    میرا کیسے کام چلے جب نام سے کرن نہ پھوٹے

    اب کیا جینے پر اتراؤں اب کیا نام کماؤں

    اب بھی راکھ کے ڈھیر کے نیچے سسک رہی چنگاری

    اب بھی کوئی جتن کرے تو جوالا مکھی بن جاؤں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites