دیکھ دل کو مرے او کافر بے پیر نہ توڑ

بہادر شاہ ظفر

دیکھ دل کو مرے او کافر بے پیر نہ توڑ

بہادر شاہ ظفر

MORE BY بہادر شاہ ظفر

    دیکھ دل کو مرے او کافر بے پیر نہ توڑ

    گھر ہے اللہ کا یہ اس کی تو تعمیر نہ توڑ

    غل سدا وادئ وحشت میں رکھوں گا برپا

    اے جنوں دیکھ مرے پاؤں کی زنجیر نہ توڑ

    دیکھ ٹک غور سے آئینۂ دل کو میرے

    اس میں آتا ہے نظر عالم تصویر نہ توڑ

    تاج زر کے لیے کیوں شمع کا سر کاٹے ہے

    رشتۂ الفت پروانہ کو گل گیر نہ توڑ

    اپنے بسمل سے یہ کہتا تھا دم نزع وہ شوخ

    تھا جو کچھ عہد سو او عاشق دلگیر نہ توڑ

    رقص بسمل کا تماشا مجھے دکھلا کوئی دم

    دست و پا مار کے دم تو تہ شمشیر نہ توڑ

    سہم کر اے ظفرؔ اس شوخ کماندار سے کہہ

    کھینچ کر دیکھ مرے سینے سے تو تیر نہ توڑ

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    دیکھ دل کو مرے او کافر بے پیر نہ توڑ نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY