دیکھ اس کو خواب میں جب آنکھ کھل جاتی ہے صبح

تاباں عبد الحی

دیکھ اس کو خواب میں جب آنکھ کھل جاتی ہے صبح

تاباں عبد الحی

MORE BY تاباں عبد الحی

    دیکھ اس کو خواب میں جب آنکھ کھل جاتی ہے صبح

    کیا کہوں میں کیا قیامت مجھ پہ تب لاتی ہے صبح

    شمع جب مجلس سے مہروؤں کی لیتی ہے اٹھا

    کیا کہوں کیا کیا سنیں اس وقت دکھلاتی ہے صبح

    جس کا گورا رنگ ہو وہ رات کو کھلتا ہے خوب

    روشنائی شمع کی پھیکی نظر آتی ہے صبح

    پاس تو سوتا ہے چنچل پر گلے لگتا نہیں

    منتیں کرتے ہی ساری رات ہو جاتی ہے صبح

    نیند سے اٹھتا ہے تاباںؔ جب مرا خورشید رو

    دیکھ اس کے منہ کے تئیں شرما کے چھپ جاتی ہے صبح

    RECITATIONS

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    دیکھ اس کو خواب میں جب آنکھ کھل جاتی ہے صبح فصیح اکمل

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY