Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

دیتا ہوں دل جسے وہ کہیں بے وفا نہ ہو

جمیلہ خدا بخش

دیتا ہوں دل جسے وہ کہیں بے وفا نہ ہو

جمیلہ خدا بخش

MORE BYجمیلہ خدا بخش

    دیتا ہوں دل جسے وہ کہیں بے وفا نہ ہو

    یہ عشق میرے واسطے شاید قضا نہ ہو

    دور اپنے در سے تم نہ کرو اے صنم اسے

    جس کو ذرا جہاں میں کہیں آسرا نہ ہو

    راحت سے مجھ کو نیند تو آئی مزار میں

    پہلو کو میرے چیر کے دل چل بسا نہ ہو

    مرنے کے بعد بھی یہی دھڑکا رہا کیا

    مل کر صبا سے خاک ہماری ہوا نہ ہو

    شکوہ کروں تو یار کا پر خوف ہے یہی

    نازک مزاج ہے وہ یہ سن کر خفا نہ ہو

    پردے سے دل کے بات جو کرتا ہے مجھے سے اب

    آتا ہے یہ خیال کہیں خود خدا نہ ہو

    رنگت ہے زرد رخ کی تو خشکی لبوں پر ہے

    آثار عشق کے ہیں کہیں دل لگا نہ ہو

    مر جاؤں اے جمیلہؔ اگر عشق غوث میں

    ممکن نہیں کہ خاک لحد کیمیا نہ ہو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے