Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

دین و دل پہلی ہی منزل میں یہاں کام آئے

علی جواد زیدی

دین و دل پہلی ہی منزل میں یہاں کام آئے

علی جواد زیدی

MORE BYعلی جواد زیدی

    دین و دل پہلی ہی منزل میں یہاں کام آئے

    اور ہم راہ وفا میں کوئی دو گام آئے

    تم کہو اہل خرد عشق میں کیا کیا بیتی

    ہم تو اس راہ میں ناواقف انجام آئے

    لذت درد ملی عشرت احساس ملی

    کون کہتا ہے ہم اس بزم سے ناکام آئے

    وہ بھی کیا دن تھے کہ اک قطرۂ مے بھی نہ ملا

    آج آئے تو کئی بار کئی جام آئے

    اک حسیں یاد سے وابستہ ہیں لاکھوں یادیں

    اشک امنڈ آتے ہیں جب لب پہ ترا نام آئے

    سی لیے ہونٹ مگر دل میں خلش رہتی ہے

    اس خموشی کا کہیں ان پہ نہ الزام آئے

    چند دیوانوں سے روشن تھی گلی الفت کی

    ورنہ فانوس تو لاکھوں ہی سر بام آئے

    یہ بھی بدلے ہوئے حالات کا پرتو ہے کہ وہ

    خلوت خاص سے تا جلوہ گہ عام آئے

    ہو کے مایوس میں پیمانہ بھی جب توڑ چکا

    چشم ساقی سے پیا پے کئی پیغام آئے

    شہر میں پہلے سے بد نام تھے یوں بھی زیدیؔ

    ہو کے مے خانے سے کچھ اور بھی بد نام آئے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق,

    نعمان شوق

    دین و دل پہلی ہی منزل میں یہاں کام آئے نعمان شوق

    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    મધ્યકાલથી લઈ સાંપ્રત સમય સુધીની ચૂંટેલી કવિતાનો ખજાનો હવે છે માત્ર એક ક્લિક પર. સાથે સાથે સાહિત્યિક વીડિયો અને શબ્દકોશની સગવડ પણ છે. સંતસાહિત્ય, ડાયસ્પોરા સાહિત્ય, પ્રતિબદ્ધ સાહિત્ય અને ગુજરાતના અનેક ઐતિહાસિક પુસ્તકાલયોના દુર્લભ પુસ્તકો પણ તમે રેખ્તા ગુજરાતી પર વાંચી શકશો

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے