دل ناداں کوئی محشر نہ اٹھانا اس وقت

جعفر شیرازی

دل ناداں کوئی محشر نہ اٹھانا اس وقت

جعفر شیرازی

MORE BYجعفر شیرازی

    دل ناداں کوئی محشر نہ اٹھانا اس وقت

    آ رہا ہے مری باتوں میں زمانا اس وقت

    کرب تنہائی کی تاویل تو مشکل ہے بہت

    کیسے چپ چاپ ہوا آپ کا آنا اس وقت

    رسم تجدید مراسم بھی ضروری ہے مگر

    یاد آیا ہے مجھے وقت پرانا اس وقت

    یہ گھڑی کوئی فراموش نہیں کر سکتا

    میری آنکھوں میں ہے اک خواب سہانا اس وقت

    آ رہا ہے کوئی پھر دام نظر میں جعفرؔ

    ایسے منظر سے نگاہیں نہ ہٹانا اس وقت

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY