دل ہیں یوں مضطرب مکانوں میں

اعتبار ساجد

دل ہیں یوں مضطرب مکانوں میں

اعتبار ساجد

MORE BYاعتبار ساجد

    دل ہیں یوں مضطرب مکانوں میں

    مچھلیاں جیسے مرتبانوں میں

    دھوپ سے ڈھونڈتے ہیں راہ فرار

    لوگ شیشے کے سائبانوں میں

    بے ارادہ کلام کی خواہش

    بے سبب لکنتیں زبانوں میں

    تیری آمد پہ جیسے لوٹ آیا

    وقت گزرے ہوئے زمانوں میں

    دل دھڑکتا ہے ہر ستارے کا

    آج کی رات آسمانوں میں

    زنگ آلود ہو گئے جذبی

    جم گئے حرف سرد خانوں میں

    ریشمی لوگ ڈھونڈتے ہیں ہم

    شہر کے آہنی مکانوں میں

    مأخذ :
    • کتاب : Mujhe Koi Sham Udhar Do (Pg. 91)
    • Author : Aitabar Sajid
    • مطبع : Ilm o Irfan Publishers Lahore (2007,2009)
    • اشاعت : 2007,2009

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY