دل کا معاملہ نگۂ آشنا کے ساتھ

سید عابد علی عابد

دل کا معاملہ نگۂ آشنا کے ساتھ

سید عابد علی عابد

MORE BYسید عابد علی عابد

    دل کا معاملہ نگۂ آشنا کے ساتھ

    ایسے ہے جیسے رابطۂ گل صبا کے ساتھ

    دیکھو تو پیچ و تاب کی صورت کہ مل گئی

    شام فراق بھی تری زلف دوتا کے ساتھ

    یہ کیا بہار ہے کہ دکھائی گئی مجھے

    شعلوں کی آنچ بھی گل رنگیں قبا کے ساتھ

    یہ کیا طلسم ہے کہ سنایا گیا مجھے

    ساز شکست دل تری آواز پا کے ساتھ

    اے دوستو یہی ہے قیامت کی روز حشر

    ہم بھی جگائے جائیں گے خلق خدا کے ساتھ

    گلشن میں آئی پیرہن رنگ بن گئی

    وہ موج خوں کہ چہرہ کشا تھی حنا کے ساتھ

    عابدؔ بیان جلوۂ ناگاہ کیا کروں

    خوبی ادا کے ساتھ ہے شوخی حیا کے ساتھ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY