دل کے ہاتھوں خراب ہو جانا

بلراج حیات

دل کے ہاتھوں خراب ہو جانا

بلراج حیات

MORE BYبلراج حیات

    دل کے ہاتھوں خراب ہو جانا

    زندگی کامیاب ہو جانا

    مجھ سے کب ایسے معجزے ہوں گے

    خود ہی عزت مآب ہو جانا

    آج گل بن لے زخم تنہائی

    پھر کبھی آفتاب ہو جانا

    میں نے تسکین کرب مانگی ہے

    اے دعا مستجاب ہو جانا

    جب کسی امتحاں سے خوف لگے

    تم مرے ہم رکاب ہو جانا

    خواب کو سچ میں ڈھالنے کی لگن

    دیکھیو خود نہ خواب ہو جانا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY