دل میں اب یوں ترے بھولے ہوئے غم آتے ہیں

فیض احمد فیض

دل میں اب یوں ترے بھولے ہوئے غم آتے ہیں

فیض احمد فیض

MORE BYفیض احمد فیض

    دل میں اب یوں ترے بھولے ہوئے غم آتے ہیں

    جیسے بچھڑے ہوئے کعبہ میں صنم آتے ہیں

    ایک اک کر کے ہوئے جاتے ہیں تارے روشن

    میری منزل کی طرف تیرے قدم آتے ہیں

    رقص مے تیز کرو ساز کی لے تیز کرو

    سوئے مے خانہ سفیران حرم آتے ہیں

    کچھ ہمیں کو نہیں احسان اٹھانے کا دماغ

    وہ تو جب آتے ہیں مائل بہ کرم آتے ہیں

    اور کچھ دیر نہ گزرے شب فرقت سے کہو

    دل بھی کم دکھتا ہے وہ یاد بھی کم آتے ہیں

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    مہدی حسن

    مہدی حسن

    فردوسی بیگم

    فردوسی بیگم

    RECITATIONS

    ریتا گانگولی

    ریتا گانگولی

    ریتا گانگولی

    دل میں اب یوں ترے بھولے ہوئے غم آتے ہیں ریتا گانگولی

    مآخذ :
    • کتاب : Nuskha Hai Wafa (Pg. 158)

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY