دل میں امنگ اور ارادہ کوئی تو ہو

خلیل مامون

دل میں امنگ اور ارادہ کوئی تو ہو

خلیل مامون

MORE BYخلیل مامون

    دل میں امنگ اور ارادہ کوئی تو ہو

    بے کیف زندگی میں تماشا کوئی تو ہو

    یہ کیا کہ دفن ہو گئے چپ چاپ قبر میں

    مرنے کے بعد موت کا جلسہ کوئی تو ہو

    کوئی تو نام لے کے پکارے ہمیں یہاں

    اس بھیڑ میں ہمارا شناسا کوئی تو ہو

    ملتی نہیں ہے خاک کہیں سر پہ ڈالنے

    دریا بہت سے دیکھے ہیں صحرا کوئی تو ہو

    آنکھوں میں نور ہے نہ حلاوت زبان میں

    احباب اتنے سارے ہیں میٹھا کوئی تو ہو

    باتوں سے عقل و فہم کی تنگ آ چکا ہوں میں

    دانش کدہ میں ایک دوانہ کوئی تو ہو

    یہ سچ ہے میں ہوں قید خیالوں میں خواب میں

    جینے کے واسطے مرے دنیا کوئی تو ہو

    مر کر دوام پاؤں یہ امید تو نہیں

    میری کہانی بعد میں کہتا کوئی تو ہو

    مآخذ :
    • کتاب : Sanson Ke Paar (Pg. 53)
    • Author : Khalil Mamoon
    • مطبع : Educational Publishing House, Delhi (2015)
    • اشاعت : 2015

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY