دل بر سے ہم اپنے جب ملیں گے

میر حسن

دل بر سے ہم اپنے جب ملیں گے

میر حسن

MORE BYمیر حسن

    دل بر سے ہم اپنے جب ملیں گے

    اس گم شدہ دل سے تب ملیں گے

    یہ کس کو خبر ہے اب کے بچھڑے

    کیا جانیے اس سے کب ملیں گے

    جان و دل و ہوش و صبر و طاقت

    اک ملنے سے اس کے سب ملیں گے

    دنیا ہے سنبھل کے دل لگانا

    یاں لوگ عجب عجب ملیں گے

    ظاہر میں تو ڈھب نہیں ہے کوئی

    ہم یار سے کس سبب ملیں گے

    ہوگا کبھی وہ بھی دور جو ہم

    دل دار سے روز و شب ملیں گے

    آرام حسنؔ تبھی تو ہوگا

    اس لب سے جب اپنے لب ملیں گے

    مآخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY