دوستی کچھ نہیں الفت کا صلہ کچھ بھی نہیں

سلمان اختر

دوستی کچھ نہیں الفت کا صلہ کچھ بھی نہیں

سلمان اختر

MORE BYسلمان اختر

    دوستی کچھ نہیں الفت کا صلہ کچھ بھی نہیں

    آج دنیا میں بجز ذہن رسا کچھ بھی نہیں

    پتے سب گر گئے پیڑوں سے مگر کیا کہیے

    ایسا لگتا ہے ہمیں جیسے ہوا کچھ بھی نہیں

    کل کی یادوں کی جلانے کو جلائیں مشعل

    ایک تاریک اداسی کے سوا کچھ بھی نہیں

    ڈھونڈھنا چھوڑ دو پرچھائیں کا مسکن یارو

    چاہے جس طرح جیو اس میں نیا کچھ بھی نہیں

    اک بروٹس سے شکایت ہو تو دل دکھتا ہے

    ہو جو ہر ایک سے شکوہ تو گلہ کچھ بھی نہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    دوستی کچھ نہیں الفت کا صلہ کچھ بھی نہیں نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY