دکھ اپنا اگر ہم کو بتانا نہیں آتا

وسیم بریلوی

دکھ اپنا اگر ہم کو بتانا نہیں آتا

وسیم بریلوی

MORE BY وسیم بریلوی

    دکھ اپنا اگر ہم کو بتانا نہیں آتا

    تم کو بھی تو اندازہ لگانا نہیں آتا

    پہنچا ہے بزرگوں کے بیانوں سے جو ہم تک

    کیا بات ہوئی کیوں وہ زمانہ نہیں آتا

    میں بھی اسے کھونے کا ہنر سیکھ نہ پایا

    اس کو بھی مجھے چھوڑ کے جانا نہیں آتا

    اس چھوٹے زمانے کے بڑے کیسے بنوگے

    لوگوں کو جب آپس میں لڑانا نہیں آتا

    ڈھونڈھے ہے تو پلکوں پہ چمکنے کے بہانے

    آنسو کو مری آنکھ میں آنا نہیں آتا

    تاریخ کی آنکھوں میں دھواں ہو گئے خود ہی

    تم کو تو کوئی گھر بھی جلانا نہیں آتا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    جگجیت سنگھ

    جگجیت سنگھ

    مآخذ:

    • Book : Mera Kiya (Pg. 33)
    • Author : Waseem Barelvi
    • مطبع : Maktaba Jamia Ltd. (2007)
    • اشاعت : 2007

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY