دکھ کا احساس نہ مارا جائے

محمد علوی

دکھ کا احساس نہ مارا جائے

محمد علوی

MORE BYمحمد علوی

    دکھ کا احساس نہ مارا جائے

    آج جی کھول کے ہارا جائے

    ان مکانوں میں کوئی بھوت بھی ہے

    رات کے وقت پکارا جائے

    سوچنے بیٹھیں تو اس دنیا میں

    ایک لمحہ نہ گزارا جائے

    ڈھونڈتا ہوں میں زمیں اچھی سی

    یہ بدن جس میں اتارا جائے

    ساتھ چلتا ہوا سایہ اپنا

    ایک پتھر اسے مارا جائے

    ہم یگانہ تو نہیں ہیں علویؔ

    ناؤ جائے کہ کنارا جائے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    محمد علوی

    محمد علوی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY