دشمن کی دوستی ہے اب اہل وطن کے ساتھ

مجروح سلطانپوری

دشمن کی دوستی ہے اب اہل وطن کے ساتھ

مجروح سلطانپوری

MORE BYمجروح سلطانپوری

    دشمن کی دوستی ہے اب اہل وطن کے ساتھ

    ہے اب خزاں چمن میں نئے پیرہن کے ساتھ

    سر پر ہوائے ظلم چلے سو جتن کے ساتھ

    اپنی کلاہ کج ہے اسی بانکپن کے ساتھ

    کس نے کہا کہ ٹوٹ گیا خنجر فرنگ

    سینے پہ زخم نو بھی ہے داغ کہن کے ساتھ

    جھونکے جو لگ رہے ہیں نسیم بہار کے

    جنبش میں ہے قفس بھی اسیر چمن کے ساتھ

    مجروحؔ قافلے کی مرے داستاں یہ ہے

    رہبر نے مل کے لوٹ لیا راہزن کے ساتھ

    RECITATIONS

    مجروح سلطانپوری

    مجروح سلطانپوری

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    مجروح سلطانپوری

    دشمن کی دوستی ہے اب اہل وطن کے ساتھ مجروح سلطانپوری

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY